اردو
Tuesday 26th of September 2017
code: 83620
حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت پر سعودی خاتون کو عدالت کے کٹہرے میں کھڑا کر دیا

سعودی حکومت نے اس ملک کی ایک خاتون کو حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے اور ان میں پیش پیش رہنے پر اسے عدالت کے کٹہرے میں لا کر کھڑا کر دیا۔
سعودی اخبار عکاظ کی رپورٹ کے مطابق، اس خاتون جس کا نام و پتہ ظاہر نہیں کیا گیا نے قطیف کے علاقے میں حکومت کے خلاف ہوئے مظاہرے میں شرکت کی تھی۔
رپورٹ کے مطابق، ۴۳ سالہ اس خاتون پر دھشتگرد سرگرمیاں انجام دینے کا الزام بھی عائد کیا گیا ہے۔
یہ ایسے حال میں ہے کہ انسانی حقوق کی تنظیم نے اس خاتون کا نام نعیمہ المطرود ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایک نرس ہے اور اس کا دھشتگردانہ سرگرمیوں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
عدالت نے ریاض میں پیر کے روز اس خاتون کے خلاف درج کئے گئے مقدمے کی سماعت میں اس پر متعدد الزامات عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ عورت سوشل میڈیا پر حکومت کے خلاف سرگرمیاں انجام دیتی رہی ہے۔
یہ ایسے حال میں ہے کہ قطیف کے عوام نے آل سعود حکومت کے خلاف مظاہرے کرتے ہوئے سلمان بن عبد العزیز کی تصویروں کو نذر آتش کیا ہے۔
واضح رہے کہ آل سعود حکومت نے حالیہ سالوں میں صرف حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے کے الزام میں تقریبا ۳۰ افراد کو شہید کر دیا ہے۔   

user comment
 

latest article

  عراق کی مزاحمتی جماعتیں امام خامنہ ای کے زیر قیادت کام کررہی ...
  صحرائے سینا میں مصر کے 2 فوجی ہلاک
  نجف اشرف میں ’’بین الاقوامی غدیر میڈیا فیسٹیول‘‘ کے ...
  روہنگیا کے مسلمان مہاجرین ہندوستان کے قومی سلامتی کے لئے ...
  برما مسلمانوں پر جاری بربریت کے مقابلے میں اقوام عالم کی ...
  شہدائے مدافع حرم کے ’’بے سر کمانڈروں‘‘ کی یاد میں تقریب کا ...
  بحران شام کے آغاز پر رہبر انقلاب سے ملاقات کا حال از زبان سید ...
  میانمار میں تشدد اسلام اور بدھ مت کی لڑائی نہیں سیاسی جنگ ہے: ...
  بنگلا دیش نے سرحد پر باردوی سرنگیں بچھانے پر احتجاجاً ...
  داعشیوں پر مہلک اور کاری ضرب / شامی فورسز نے دیرالزورشہر کا ...