اردو
Tuesday 21st of November 2017
code: 83620
حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت پر سعودی خاتون کو عدالت کے کٹہرے میں کھڑا کر دیا

سعودی حکومت نے اس ملک کی ایک خاتون کو حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے اور ان میں پیش پیش رہنے پر اسے عدالت کے کٹہرے میں لا کر کھڑا کر دیا۔
سعودی اخبار عکاظ کی رپورٹ کے مطابق، اس خاتون جس کا نام و پتہ ظاہر نہیں کیا گیا نے قطیف کے علاقے میں حکومت کے خلاف ہوئے مظاہرے میں شرکت کی تھی۔
رپورٹ کے مطابق، ۴۳ سالہ اس خاتون پر دھشتگرد سرگرمیاں انجام دینے کا الزام بھی عائد کیا گیا ہے۔
یہ ایسے حال میں ہے کہ انسانی حقوق کی تنظیم نے اس خاتون کا نام نعیمہ المطرود ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایک نرس ہے اور اس کا دھشتگردانہ سرگرمیوں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
عدالت نے ریاض میں پیر کے روز اس خاتون کے خلاف درج کئے گئے مقدمے کی سماعت میں اس پر متعدد الزامات عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ عورت سوشل میڈیا پر حکومت کے خلاف سرگرمیاں انجام دیتی رہی ہے۔
یہ ایسے حال میں ہے کہ قطیف کے عوام نے آل سعود حکومت کے خلاف مظاہرے کرتے ہوئے سلمان بن عبد العزیز کی تصویروں کو نذر آتش کیا ہے۔
واضح رہے کہ آل سعود حکومت نے حالیہ سالوں میں صرف حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے کے الزام میں تقریبا ۳۰ افراد کو شہید کر دیا ہے۔   

user comment
 

latest article

  چینی شیعہ زائرین کربلا کی پذیرائی کرنے میں مصروف
  اربعین حسینی کے موقع پر امریکی خاتون نے شیعہ مذہب قبول کر لیا
  نجف اشرف اور کربلائے معلی میں ایام اربعین کے دوران اردو زبان ...
  ایمریٹس ائیر لائن نے پاکستانی زائرین کو لے جانے سے انکار کر ...
  شامی فوج نے دیر الزور کو داعش سے آزاد کرا لیا
  بیروت میں دوسری بین الاقوامی فلسطین کانفرنس کی اختتامی ...
  نائیجیریا؛ مسجد میں خودکش دھماکے کے نتیجے میں پانچ نمازی ...
  غزہ پر اسرئیل کی جانب سے زہریلی گیس کے استعمال کا انکشاف
  پاکستان میں شہباز شریف کو وزیر اعظم نامزد کرنے کا فیصلہ
  صہیونی حکومت کے خلاف جنگ جاری پر رہبر انقلاب اسلامی کی تاکید