اردو
Monday 24th of July 2017
code: 83620
حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت پر سعودی خاتون کو عدالت کے کٹہرے میں کھڑا کر دیا

سعودی حکومت نے اس ملک کی ایک خاتون کو حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے اور ان میں پیش پیش رہنے پر اسے عدالت کے کٹہرے میں لا کر کھڑا کر دیا۔
سعودی اخبار عکاظ کی رپورٹ کے مطابق، اس خاتون جس کا نام و پتہ ظاہر نہیں کیا گیا نے قطیف کے علاقے میں حکومت کے خلاف ہوئے مظاہرے میں شرکت کی تھی۔
رپورٹ کے مطابق، ۴۳ سالہ اس خاتون پر دھشتگرد سرگرمیاں انجام دینے کا الزام بھی عائد کیا گیا ہے۔
یہ ایسے حال میں ہے کہ انسانی حقوق کی تنظیم نے اس خاتون کا نام نعیمہ المطرود ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایک نرس ہے اور اس کا دھشتگردانہ سرگرمیوں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
عدالت نے ریاض میں پیر کے روز اس خاتون کے خلاف درج کئے گئے مقدمے کی سماعت میں اس پر متعدد الزامات عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ عورت سوشل میڈیا پر حکومت کے خلاف سرگرمیاں انجام دیتی رہی ہے۔
یہ ایسے حال میں ہے کہ قطیف کے عوام نے آل سعود حکومت کے خلاف مظاہرے کرتے ہوئے سلمان بن عبد العزیز کی تصویروں کو نذر آتش کیا ہے۔
واضح رہے کہ آل سعود حکومت نے حالیہ سالوں میں صرف حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کرنے کے الزام میں تقریبا ۳۰ افراد کو شہید کر دیا ہے۔   

user comment
 

latest article

  رہبر انقلاب اسلامی کی موجودگی میں آٹھویں امام (ع) کی ضریح ...
  اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا بلقان اور مغربی ...
  سعودی عرب میں طوائف الملوکی ہوگی / داعش سعودی عرب کی سڑکوں پر ...
  آل سعود حکومت کی نابودی کے اسباب، صیہونی تھنک ٹینک کا بیان
  جوہری معاہدے کے بعد ایران نے اپنا سکہ منوا لیا
  مجلس وحدت مسلمین کی ضلعی شوری کے اجلاس میں اہم فیصلے
  مصر کے صوبہ الجیزہ میں 5 مصری فوجی ہلاک
  نوازشریف " را " کے ایجنٹ / نواز شریف نے پاکستان کو تنہا ...
  سی آئی اے ایجنٹ کا سنسنی خیز اعتراف: عالمی تجارتی مرکز کو ہم ...
  آل سعود کے گماشتوں کے ہاتھوں قطیف میں تین شیعہ مسلمان شہید