اردو
Saturday 25th of March 2017
code: 83547
صومالیہ میں شدید قحط سالی، 48 گھنٹوں میں 110 افراد ہلاک

صومالیہ کے وزیر اعظم حسن علی کھائرے نے مرنے والے افراد کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ شدید خشک سالی کے باعث لاکھوں لوگوں کی زندگی خطرے سے دوچار ہے۔

صومالیہ کی حکومت نے گزشتہ ماہ 28 فروری کو خشک سالی کو قومی آفت قرار دیا تھا، جس کے بعد پہلی بار حکومت نے سرکاری سطح پر خشک سالی کے باعث ہلاکتوں کی تصدیق کی۔

واضح رہے کہ خشک سالی کی قومی کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کے دوران وزیر اعظم حسن علی کھائرے نے بتایا کہ قحط سے مرنے والے تمام افراد کا تعلق ملک کے جنوب مغربی علاقے سے ہے۔

اقوام متحدہ (یو این) کےاعداد و شمار کے مطابق افریقہ کے اس خطے کے 50 لاکھ افراد کو مدد کی ضرورت ہے، جہاں خطرناک قحط کا اندیشہ موجود ہے۔

یاد رہے کہ صومالیہ ان چار ممالک میں سے ایک ہے، جن کے لیے گزشتہ ماہ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے تباہ کن بھوک اور قحط سالی سے نمٹنے کے لیے 4 ارب 4 کروڑ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا تھا۔

جن دیگر تین ممالک کے لیے امداد کا اعلان کیا گیا تھا ان میں نائیجیریا، یمن اور جنوبی سوڈان شامل ہیں۔

user comment
 

latest article

  تمام عراقی شہری موصل کے بے گھر افراد کی مدد کریں
  میانمار کی فوج اور پولیس کا مسلمانوں پر ظلم و ستم جاری
  پاکستان میں اب بھی 2کروڑ 20 لاکھ سے زائد بچے تعلیم سے محروم
  آل سعود کے مزدوروں کے ہاتھوں سعودی عرب میں دو شیعہ نوجوان ...
  مغرب، سقوط کے دھانے پر !
  جنوبی سامرا میں بارودی سرنگوں کا خاتمہ
  لیبی پارلیمنٹ کے اسپیکر: لیبیا میں قبل از وقت انتخابات کرائے ...
  داعش کا سرغنہ البغدادی موصل چھوڑ کر نکل گیا
  مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں 5 کشمیری شہید، 30 زخمی
  رہبر انقلاب اسلامی کا فقہا کی کونسل سے خطاب، اسلامی نظام کے ...