اردو
Thursday 13th of June 2024
0
نفر 0

روزے کی حالت میں بلغم نگلنے کا کیا حکم ہے؟

روزے کی حالت میں بلغم کو نگلنے کا کیا حکم ہے؟ جواب؛ اگر بلغم آب دہان سے مخلوط ہو جائے تو اس صورت میں؛ الف: احتیاط و
روزے کی حالت میں بلغم نگلنے کا کیا حکم ہے؟

روزے کی حالت میں بلغم کو نگلنے کا کیا حکم ہے؟
جواب؛ اگر بلغم آب دہان سے مخلوط ہو جائے تو اس صورت میں؛
الف: احتیاط واجب کی بنا پر نگلنا جائز نہیں ہے۔
ب: احتیاط مستحب کی بنا پر نگلنا جائز نہیں ہے۔( سیستانی و زنجانی)
ج: اسے نگلنا نہیں چاہئے: ( وحید، اراکی)۔


source : abna
0
0% (نفر 0)
 
نظر شما در مورد این مطلب ؟
 
امتیاز شما به این مطلب ؟
اشتراک گذاری در شبکه های اجتماعی:

latest article

حقیقت و واقعیت کے درمیان فرق کیا ہے؟ کیا یہ ...
ازدواج کے کیا شرائط ہیں؟ کیا مرد و عورت کی دلی ...
شیعہ نماز میں کیوں سجدہ گاہ پر سجدہ کرتے ہیں؟
سوره مریم کی آیت نمبر١٧میں، خداوند متعال کے اس ...
سید زادی کی غیر سید سے شادی کے بارے میں مذہبِ آلِ ...
حضرت محمد ۖپر صلوات پڑھتے وقت کیوں آل کا اضافہ ...
فلسفہ اور اسرار حج کیا ہیں؟
امام حسین (ع) کی شہادت کے بعد کوفہ و شام کے حالات ...
عقیقہ کا کیا طریقہ ہے اور اس کا گوشت کون کون کھا ...
کیا اسلام کی نظر میں تعظیم کا سجده جائز هے؟

 
user comment