اردو
Tuesday 21st of May 2024
0
نفر 0

روزے کی حالت میں بلغم نگلنے کا کیا حکم ہے؟

روزے کی حالت میں بلغم کو نگلنے کا کیا حکم ہے؟ جواب؛ اگر بلغم آب دہان سے مخلوط ہو جائے تو اس صورت میں؛ الف: احتیاط واجب کی بنا پر نگلنا جائز نہیں ہے۔ ب: احتیاط مستحب کی بنا پر نگلنا جائز نہیں ہے۔( سیستانی و زنجانی) ج: اسے نگلنا نہیں چاہئے: ( وحید، اراکی)۔
روزے کی حالت میں بلغم نگلنے کا کیا حکم ہے؟

روزے کی حالت میں بلغم کو نگلنے کا کیا حکم ہے؟
جواب؛ اگر بلغم آب دہان سے مخلوط ہو جائے تو اس صورت میں؛
الف: احتیاط واجب کی بنا پر نگلنا جائز نہیں ہے۔
ب: احتیاط مستحب کی بنا پر نگلنا جائز نہیں ہے۔( سیستانی و زنجانی)
ج: اسے نگلنا نہیں چاہئے: ( وحید، اراکی)۔


source : abna24
0
0% (نفر 0)
 
نظر شما در مورد این مطلب ؟
 
امتیاز شما به این مطلب ؟
اشتراک گذاری در شبکه های اجتماعی:

latest article

قرآن مجید میں آیا ہے کہ انسان کا رزق حلال ھونے کے ...
غیبت میں امام زمانہ عج کا مسکن کہاں ہے؟
کتنے غلے کی پیداوار پر زکواۃ واجب ہے؟
بچپن میں نبوت یا امامت ملنا کس طرح ممکن ہے؟
بلی اگر کپڑوں سے لگ جائے تو کیا ان کپڑوں میں نماز ...
کیا صدقات کو مساجد کے امور میں خرچ کیا جا سکتا ہے؟
"موعظہ" اور " نصیحت" کے درمیان کیا فرق ...
حدیث میں آیا ہے کہ دو افراد کے درمیان صلح کرانا، ...
مجتہدین کے درمیان اختلاف کیوں پایا جاتا ہے؟
کیا اسلام میں گالی دینا، برا بھلا کہنا، دشنام ...

 
user comment